صدارتی انتخاب سے قبل ہی ٹرمپ جیل جا سکتے ہیں : الزیبتھ وارین

امریکہ کی رکن پارلیمان سین الیزبیتھ وارین کا خیال ہے کہ امریکہ کے صدر اپنی موجودہ مدت کار مکمل کرنے اور 2020کے صدارتی انتخابات سے پہلے ہی جیل جاسکتے ہیں۔سنیٹر69سالہ محترمہ وارین نے گزشتہ ہفتہ ہی آئندہ صدارتی انتخابات لڑنے کا اعلان کیا ہے۔سی این این براڈکاسٹ کے مطابق اتوار کو محترمہ وارین نے امریکی صوبہ لووا میں عوامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جس وقت ہم 2020میں داخل ہوں گے مسٹر ٹرمپ صدر کے عہدہ پر نہیں رہیں گے۔ ہوسکتا ہے کہ وہ اس وقت تک جیل میں ہوں۔محترمہ وارین نے لوگوں سے کہاکہ مسٹر ٹرمپ کے ’نسل پرستانہ‘ اور ’نفر ت آمیز‘ ٹوئٹ سے گمراہ نہ ہوں۔ انہوں نے کہاکہ ہر روز ایک نسل پرستانہ اور نفرت پھیلانے والا ٹوئٹ کیا جاتا ہے جو نہایت بھدا اور بدنما ہوتا ہے۔ امیدوار، کارکن اور میڈیا کے طورپر ہم کیا کریں؟ ہم تقسیم کرنے والوں کو ایسانہیں کرنے دیں گے۔خیال رہے کہ مسٹر ٹرمپ اور محترمہ وارین کے تعلقات میں طویل عرصہ سے کشیدہ رہے ہیں۔ امریکہ میں نومبر 2020میں صدارتی انتخابات ہونے کی امید ہے۔ مسٹر ٹرمپ پھر سے صدر منتخب کئے جانے کے لئے الیکشن لڑ سکتے ہیں۔ڈیموکریٹ پارٹی سے تعلق رکھنے والی سینیٹر، الزبیتھ وارن نے ہفتے کے روز صدارتی انتخاب لڑنے کا باضابطہ اعلان کیا۔ اْنھوں نے اس بات کا اعلان ریاست میساچیوسٹس کے شہر لارنس میں کیا جو صنعتی کارکنان کا شہر ہے۔ اْنھوں نے 2020ء کی صدارتی مہم کی بنیاد رکھتے ہوئے معاشی ناانصافی سے لڑنے اور ”ایسا امریکہ قائم کرنے” پر زور دیا، جوسب کو برابر حقوق کا ضامن ہے۔صدارتی مہم کے آغاز پر وارن نے تبدیلی کا مطالبہ کیا۔ اْنھوں نے کہا کہ ”پسے ہوئے متوسط طبقے” کی تکالیف کو دور کرنے کی اشد ضرورت ہے، جس کے باعث امریکہ ”امیروں کے احتساب پر کوئی خاص دھیان نہیں دیتا، جب کہ باقی طبقات کے لیے مواقع نہ ہونے کے برابر ہیں۔وارن اور اْن کے حامیوں کو توقع ہے کہ یہ پیغام اْنھیں ڈیموکریٹ پارٹی کے ممکنہ امیدواروں میں نمایان کرے گا، جب کہ ماضی میں وہ اپنے مقامی اصل امریکی ورثے سے متعلق اْن کے دعوے پر سر اٹھانے والا تنازعہ قصہ پارینہ بن جائے گا۔اْنھوں نے اپنے کلمات میں ‘میڈیکئر سب کے لیے’ اور ‘واشنگٹن لوبیئنگ کا خاتمہ’ لانے کے لیے آواز بلند کی۔

جواب چھوڑیں