ہم گائو ماتا کے دودھ کا قرض نہیں چکاسکتے: وزیراعظم مودی

اسے ماں کہتے ہوئے وزیراعظم نریندرمودی نے آج کہا کہ گائے ہندوستان کی روایت و تہذیب کا ایک اہم حصہ ہے اور ان کی حکومت نے اس مویشی کی صحت کو بہتر بنانے کے لئے مختلف قدم اٹھائے ہیں۔ برنداون چندرودیا مندر کے اپنے پہلے دورہ کے بعد سبھا سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے متھرا۔ برنداون کے عوام کی ستائش کی اور کہا کہ گائو سیوا اس علاقہ میں ایک روایت ہے ان کے یہ الفاظ ادا کرنے پر حاضرین خوش ہوگئے اور کافی زور سے تالیاں بجانے لگے۔ ان کی جانب سے ساتھ ہی ساتھ تقریر کے دوران گائو ماتا کی جئے کے نعرے لگائے گئے۔ مودی نے پرزور الفاظ میں کہا کہ ان کی حکومت نے سکیورٹی بندوبست کیا ہے اور ان کے اقتدار کے گذشتہ 55 ماہ کے دوران بچوں اور مائوں کی بہتر صحت کو یقینی بنایاہے۔ انہوں نے کہا ’’لیکن ایک اور ماں ہے جو ایک عرصہ سے ہمیں پروان چڑھاتی آئی ہے میں گوکل کی سرزمین پر اس کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں وہ ماں گائو ماں ہے۔ ہم گائے (گائو ماتا) کے دودھ کا قرض نہیں چکاسکتے۔ گائے ہندوستان کی روایت و تہذیب کا اہم حصہ ہے اور یہ دیہی معیشت کے استحکام میں اپنا اہم رول ادا کرتی ہے‘‘۔ چیف منسٹر اترپردیش یوگی آدتیہ ناتھ، متھرا کی بی جے پی رکن پارلیمنٹ ہیمامالینی اور متھرا کے رکن اسمبلی اور اترپردیش کے وزیر سری کانت شرما بھی اس موقع پر موجود تھے۔

جواب چھوڑیں