کا بینہ میں19 فروری کو توسیع ، چیف منسٹر کا قطعی فیصلہ

اپوزیشن جماعتوں کی شدید تنقید کے درمیان چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ نے بالاآخر19 فروری کو کابینہ میں توسیع کا قطعی فیصلہ کیا ہے ۔بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر اپنی کابینہ میں10قائدین کو شامل کرنے والے ہیں۔ توقع ہے کہ پارٹی کے 10 قائدین ،19فروری کو11:30 بجے دن حلف لیں گے ۔ چیف منسٹر پیشی کے ذرائع کے مطابق چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے محکمہ جنرل ایڈمنسٹریشن کے عہدیداروں کو تقریب حلف برداری کے انتظامات کرنے کی ہدایت دی ہے۔ اس سلسلہ میں کے چندر شیکھر راؤ نے آج راج بھون پہونچکر ریاستی گورنر ای ایس ایل نرسمہن سے ملاقات کی ۔ واضح رہے کہ اسمبلی انتخابات میں شاندار کامیابی حاصل کرتے ہوئے ریاست کا اقتدار دوبارہ حاصل کرنے کے بعد کے چندر شیکھر راؤ نے 13 دسمبر کو چیف منسٹر کے عہدہ کا حلف لیا تھا اور ان کے ساتھ محمد محمو د علی ایم ایل سی کو وزیر کا حلف دلایا گیا تھا بعد میں محمود علی کو داخلہ کا قلمدان حوالے کیا گیا ۔ تقریباً دو ماہ تک چیف منسٹر مکمل کابینہ کے بغیر حکومت چلا رہے ہیں۔ اسمبلی کے بجٹ اجلاس سے عین قبل چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کابینہ میں توسیع کا فیصلہ کیا ہے۔ اسمبلی کے بجٹ سیشن کا آغاز22 فروری سے ہوگا ۔ چار روزہ سیشن کے پہلے روز علی الحساب بجٹ پیش کیا جائے گا ۔ آخری روز25 فروری کو ایوان میں تصرف بل منظور کرلیا جائے گا ۔کا بینہ میں توسیع کے بعد نئے وزیر کو فینانس کا قلمدان حوالے کیا جاتا ہے تو نئے وزیر فینانس، ایوان میں علی الحساب بجٹ پیش کریں بصورت دیگر امکان ہے کہ چیف منسٹر کے سی آر خود بجٹ پیش کریں گے ۔ قمری جنتری کے مطابق19 فروری کو مارگا شودبھا پورنیما ہے ا س لئے اس دن کو نیک شگون مانا جاتا ہے ۔ اس بات کو مدنظر رکھتے ہوئے کے سی آر نے 19 فروری کو کابینہ میں توسیع کا فیصلہ کیا ہے۔

جواب چھوڑیں