امریکہ‘ ہندوستان میں 6 نیوکلیر پاور پلانٹ قائم کرے گا

امریکہ نے باہمی سلامتی اور سیول نیوکلیر تعاون کو مستحکم بنانے ہندوستان میں 6 ایٹمی پاور پلانٹ تعمیر کرنے سے اتفاق کرلیا ہے اور نیوکلیر سپلائرس گروپ(این ایس جی) میں ہندوستان کی عاجلانہ رکنیت کی پرزور حمایت کی ہے۔ دونوں ممالک نے معتمد خارجہ وجئے گوکھلے اور امریکی انڈر سکریٹری آف اسٹیٹ برائے اسلحہ کنٹرول و بین الاقوامی سلامتی اینڈریا تھامسن کی مشترکہ زیرصدارت ہند۔ امریکہ حکمت عملی سلامتی مذاکرات کے آج 9 ویں راؤنڈ کے اختتام پر ایک مشترکہ بیان میں یہ بات کہی۔ مشترکہ بیان میں مقامات کی تفصیلات بتائے بغیر کہا گیا ’’ انہوں(دونوں ممالک) نے باہمی سلامتی اور سیول نیوکلیر تعاون بشمول ہندوستان میں 6 امریکی نیوکلیر پاور پلانٹس کے قیام کا عہد کیا‘‘۔ یہاں یہ تذکرہ مناسب ہوگا کہ ہندوستان اور امریکہ نے اکتوبر2008 میں ایک تاریخی معاہدہ پر دستخط کئے تھے تاکہ سیول نیوکلیر شعبہ میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کیا جاسکے۔ اس معاہدہ کی وجہ سے باہمی تعلقات کو فروغ حاصل ہوا ہے۔ اس معاہدہ کا ایک اہم پہلو نیوکلیر سپلائرس گروپ (این ایس جی) کی جانب سے ہندوستان کو خصوصی استثنیٰ تھا جس کی وجہ سے وہ 12 ممالک کے ساتھ تعاون کے معاہدوں پر دستخط کرسکا۔ استثنیٰ ملنے کے بعد ہندوستان نے امریکہ ‘ فرانس‘ روس‘ کینیڈا ‘ ارجنٹائنا ‘ آسٹریلیا‘ سری لنکا‘ برطانیہ‘ جاپان‘ ویت نام ‘ بنگلہ دیش ‘ قازقستان اور جنوبی کوریا کے ساتھ سیول نیوکلیر معاہدوں پر دستخط کئے تھے۔

جواب چھوڑیں