کرتار پور راہداری پر ہند۔ پاک بات چیت کا اختتام

کرتار پور راہداری استعمال کرتے ہوئے گردوارہ کرتار پور صاحب پر حاضری کے لئے سکھ عقیدت مندوں کو سہولتیں فراہم کرنے کے طریقہ کار پر تبادلہ خیال اور مسودہ معاہدہ کی تیاری کے لئے آج یہاں خوشگوار ماحول میں پہلا اجلاس منعقد ہوا۔ وزارت ِ خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے ٹویٹر پر کہا کہ عوام کے جذبات کا احترام کرتے ہوئے گرو نانک دیو جی کے 550 ویں یوم پیدائش کے موقع پر کرتارپور راہداری کو کارکرد بنانے کی گنجائش اور مختلف پہلوؤں پر بات چیت کا اختتام عمل میں آیا۔ میٹنگ کے بعد جاری کردہ ایک مشترکہ بیان میں کہا گیا کہ دونوں ممالک نے مجوزہ راہداری کے خاکے اور دیگر تفصیلات کے مطابق تکنیکی ماہرین کے درمیان بات چیت منعقد کی۔ واگھا میں 2 اپریل 2019 کو آئندہ میٹنگ منعقد کرنے سے اتفاق کیا گیا۔ بہرحال اس میٹنگ سے قبل 19 مارچ کو مجوزہ زیرو پوائنٹ پر تکنیکی ماہرین کا ایک اجلاس منعقدہوگا تاکہ خاکے کو قطعیت دی جاسکے۔ ہندوستانی وفد کی قیادت وزارت ِ داخلہ کے جوائنٹ سکریٹری ایس سی ایل داس نے کی جبکہ پاکستانی وفد کی قیادت پاکستانی وزارت ِ خارجہ کے ڈائرکٹر جنرل محمد فیصل نے کی۔ دونوںممالک نے مجوزہ معاہدہ کے مختلف پہلوؤں اور گنجائشوں پر تفصیلی اور تعمیری بات چیت کی۔ انہوں نے کرتار پور صاحب راہداری کی تعمیر کے لئے تیزی سے کام کرنے سے اتفاق کیا۔

جواب چھوڑیں