دونوں تلگو ریاستوں میں ہولی کا جوش وخروش

رنگوں کا تہوار ہولی آج شہر حیدرآباد اور تلنگانہ کے مختلف مقامات پر جوش وخروش کے ساتھ منایا گیا ۔ سماجی رکاوٹوں سے بالاتر ہو کر مختلف شعبہ حیات سے تعلق رکھنے والے افراد نے ہولی منائی اور ایک دوسرے پر رنگ پھینکا ، عوام کو رقص اور گانے گاتے ہوئے ایک دوسرے کو گلال لگاتے ہوئے دیکھا گیا ۔ مختلف رہاشی کالونیوں میں ہولی کا جوش وخروش انتہائی عروج پر تھا جہاں ملک کے مختلف علاقوں کے عوام نے اپنی تہذیب اور روایات کے مطابق رنگوں کا تہوار منایا ۔ نوجوان لڑکوں کو جن کے ہاتھوں میں مختلف رنگوں کے محلول سے بھری پچکاریاں تھیں، گاڑیوں پر گھومتے ہوئے دوستوں پر رنگ کی پچکاری مارتے ہوئے دیکھا گیا ۔ یہ لڑکے ، اپنے محلوں میں گھومتے ہوئے دوسروں کو گلال لگائے اور ایک دوسرے کو ہولی کی مبارکباد دی ۔ ہولی سے ایک دن قبل دھولنڈی منائی گئی ۔ گھروں کے دروازوں کو آم کے پتوں سے سجایا گیا ۔ آندھرا پردیش میں بھی ہولی، مذہبی جوش وخروش کے ساتھ منائی گئی ۔ وجئے واڑہ ، وشاکھا پٹنم اور ریاست کے دیگر مقامات پر رنگوں کا تہوار دھوم دھام سے منایا گیا ۔ عوام کی ایک بڑی تعداد کو ایک دوسرے پر گلال ڈالتے ہوئے دیکھا گیا ۔نوجوان لڑکے، گاڑیوں پر گھومتے ہوئے دیکھے گئے ۔ قبل ازیں گورنر ای ایس ایل نرسمہن اور چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ ، چیف منسٹر اے پی این چندرا بابو نائیڈو نے اپنے علیحدہ پیامات میں عوام کو ہولی کی مبارکباد دی اور کہا کہ ہولی کے تہوار سے عوام کی خوشحالی ، ترقی اور امن کو فروغ ملے گا۔

جواب چھوڑیں