نابالغ لڑکی کی عصمت ریزی اور قتل۔ملزم گرفتار

الوال پولیس نے آج ایک 6 سالہ کم عمر لڑکی کے اغوا،عصمت ریزی اور قتل کے واقعہ میں ملوث 20 سالہ راجیش کمار ساکن نندنی ٹینٹ ہاؤز ریاست بہار کو آج گرفتار کرلیا۔ ڈی سی پی بالانگر زون پی وی پدمجانے آج شام میڈیا کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ الوال پولیس کو کل ایک شکایت موصول ہوئی کہ ایل کے جی کی 6 سالہ طالبہ مکان سے تین بجے شام کھیلنے کی غرض سے باہر گئی تھی۔ تاہم وہ مکان واپس نہیں لوٹی۔ لڑکی کے پڑوسیوں نے بتایا کہ لڑکی کو مکان کے روبرو کھیلتے ہوئے دیکھا گیا تھا۔ لڑکی کے والد نے رشتہ داروں،دوستوں اور کئی مقامات پر لڑکی کو تلاش کیا، لیکن کامیابی نہیں ملی۔ لڑکی کے والد نے پولیس سے خواہش کی کہ وہ اس سلسلہ میںشکایت درج کروائی۔ اس اطلاع پر پولیس نے تلاش گمشدہ کے سلسلہ میں مقدمہ درج کیا۔ اس واقعہ کے بعد سب انسپکٹر ورا پرساد اور کرائم ٹیم نے ریلوے ٹریک کے دونوں جانب بڑے پیمانے پر تلاشی کی اور لڑکی کے مکان کے اطراف گھوم کر مقامی افراد کی مدد سے سراغ لگانے کی کوشش کی۔ تلاشی کے دوران ایک مقامی شخص نے گمشدہ نابالغ 6 سالہ لڑکی کی نعش جھاڑیوں میں خون میں لت پت اور برہنہ پائی گئی۔ لڑکی کے بھائی نے پولیس کو اطلاع دی کہ اس کی بہن ایک نامعلوم شخص کے ساتھ جس نے پڑوسیوں کے ساتھ ہولی کھیلی تھی۔ پولیس نے پڑوسی دھرمندرا سے پوچھ تاچھ کی۔ اس نے پولیس کو بتایا کہ ہولی تہوار کے سلسلہ میں مکان کے قریب اس نے ایک پارٹی کا اہتمام کیا تھا۔ اس پارٹی میں اس کا برادر نسبتی روشن اور ملزم راجیش کمار، سریندر اور سبرامنیم نے شرکت کی تھی، ملزم اس پارٹی میں حالت نشہ میں رقص بھی کیا تھا۔ اس کے بعد راجیش کمار 3 بجے دن سے 4:30 بجے شام تک یہاں سے لاپتہ ہوگیا۔ بعد ازاں دوبارہ وہ پارٹی میں شامل ہوگیا۔ اس دوران ملزم راجیش کمار نے لڑکی کو بھائی کے ساتھ کھیلتے ہوئے دیکھا۔ ملزم نے لڑکی کو اپنے پاس بلایا اور اس کو ریلوے پٹریوں کی طرف لے گیا۔ ریلوے ٹریک کے سے دور جھاڑیوں میں لڑکی کا پینٹ زبردستی نکالا۔ لڑکی نے ملزم کو روکنے کی کوشش کی، لیکن اس نے زبردستی لڑکی کی عصمت ریزی کی۔ لڑکی تکلیف برادشت نہیں کرسکی اور ہاتھ پیر مارتے ہوئے چیخنا شروع کیا۔ اس نے لڑکی کے ہاتھ پاؤں کو لوہے کے ٹکڑوں سے گردن کی طرف ضربات پہنچائے۔ لڑکی کے سرپر گہرے زخم آئے۔ اس کے باوجود وہ لڑکی کی عصمت ریزی کرتا رہا۔ لڑکی ہلاک ہونے کے بعد وہ فرار ہوگیا۔ پولیس نے ملزم کو اس کے کمرہ واقعہ کرشنا نگر کالونی، بلارم سے گرفتار کرکے پولیس اسٹیشن لایاگیا۔ دوران تفتیش ملزم نے پولیس کو اس واقعہ کی تفصیلات بتائی اور اقبال جرم کیا۔ پولیس کے بموجب ملزم دو ماہ قبل حیدرآباد آیا تھا اور وہ اس کے رشتہ دار روشن کے ساتھ رہا کرتا تھا، جو دھرمندر کا برادرنسبتی بتایاگیا ہے اور لڑکی کا پڑوسی ہے۔ ملزم کی گرفتاری انسپکٹر الوال ایم مٹیا، ڈیٹیکٹو انسپکٹر این شنکر، سب انسپکٹر پولیس وراپرساد اور ٹیم نے اے سی پی پیٹ بشیر آباد اے وی آر نرسمہا راؤ کی نگرانی میں کی گئی۔ الوال پولیس نے ملزم کے خلاف، اغوا، عصمت ریزی اور پاکسو ایکٹ اور قتل کے مقدمات درج کئے گئے ہیں۔ پولیس ہرزوایہ سے اس کیس کی تحقیقات کررہی ہے۔

جواب چھوڑیں