نظریاتی مخالفین کو دہشت گردی کے ہمدردقراردینا بھی غداری: احمد پٹیل

سینئر کانگریس قائد احمدپٹیل نے اتوار کے دن وزیراعظم نریندرمودی پر ان کی عجیب وغریب پاکستان پالیسی کے لئے تنقید کی۔ احمد پٹیل نے کہاکہ اپوزیشن قائدین کی حب الوطنی پر سوال اٹھانا ٹھیک نہیں۔ نظریاتی مخالفین کو دہشت گردی کے ہمدرد قراردینا بھی غداری کے مترادف ہے۔ احمد پٹیل نے سلسلہ وارٹوئٹس میں کہاکہ مودی جی پاکستان سے بات کرتے ہیں تو یہ قومی مفاد میں ہے‘ لیکن اگر دوسرے امن بات چیت کرتے ہیں تو انہیں موافق دہشت گردی اور پاکستان نواز قراردے دیاجاتا ہے۔ مودی جی ‘ ایسی منافقت آپ کہاں سے لائے ہیں؟ حب ا لوطنی کے نام پر اس قسم کے مذاق کے لئے ملک آپ کو کبھی معاف نہیں کرے گا۔ احمد پٹیل نے یہ ریمارکس 22مارچ کو پاکستان نیشنل ڈے پر پاکستان کو مودی کی مبارکباد کے بعد کئے۔ صدرنشین یوپی اے سونیاگاندھی کے میڈیامشیر احمد پٹیل نے کہا کہ حب الوطنی کے معنیٰ ملک اور اس کے شہریوں دونوں سے محبت کے ہوتے ہیں۔ ہرآئیڈیالوجی کا احترام حب الوطنی کی اصل ہے۔ اگر کوئی نظریاتی مخالفین کو دہشت گردی کے ہمدردکہتا ہے تو یہ بھی غداری ہے۔ رکن راجیہ سبھا نے کہا کہ کانگریس نے اپنے مخالفین کے خلاف ایسے بھدے ریمارکس کبھی نہیں کئے کیونکہ ملک سبھی کا ہے اور حب الوطنی کے حقیقی معنی یہی ہیں۔ مودی اور بی جے پی سینئر قائدین کانگریس پر الزام عائد کررہے ہیں کہ وہ پاکستان کے بالا کوٹ پر ہندوستانی فضائیہ کے حملہ پر سوال اٹھاکر مسلح افواج کی بے عزتی کررہی ہے۔ کانگریس صدرراہول گاندھی کے مشیر اعلیٰ سام پٹروڈا کے حالیہ ریمارکس پر بھی تنازعہ پیدا ہوا تھا۔ سام پٹروڈا نے کہاتھا کہ بالاکوٹ حملہ کے حقائق جاننے کا انہیں حق ہے۔

جواب چھوڑیں