خاتون کھلاڑیوں کو بھی مساوی رقم دی جائے: ثانیہ مرزا

ملک کی سرفہرست ٹینس کھلاڑی ثانیہ مرزا نے زور دے کر کہا ہے کہ خواتین کھلاڑیوں کو مردوں کے برابر یکساں انعامی رقم ملنی چاہئے ۔ثانیہ نے ہفتہ کو یہاں فکی خاتون تنظیم (ایف ایل او ) کے 35ویں سالانہ اجلاس میں مشہور بالی و وڈ اداکارہ سونم کپور کے ساتھ ایک مباحثے کے دوران یہ بات کہی۔ ثانیہ نے کہاکہ ہندوستان میں خواتین کو بااختیار بنانے کی سمت میں ہم نے ایک لمبا سفر طے کیا ہے لیکن اب بھی بہت کچھ کیا جانا باقی ہے خاص طور پر کھیل کے میدان میں۔ ثانیہ نے کہاکہ ملک میں خواتین کھلاڑیوں نے بیاڈمنٹن اور کُشتی جیسے کھیلوں میں کافی اچھی کارکردگی کی ہے لیکن عورتوں کے لئے بہت کچھ کیا جانا باقی ہے ۔خاتون کھلاڑیوں کو مردکھلاڑیوں کے برابر انعامی رقم دی جانی چاہئے ۔ ویسے اس طرح کا امتیاز پوری دنیا میں کھیل کے اندر پھیلا ہوا ہے ۔ ثانیہ اور سونم نے ایک آواز میں کہا کہ کسی بھی عورت کی ترقی میں اس کے خاندان اور خاص کر والدین کی سب سے بڑی شراکت ہے ۔ بحث میں دونوں خواتین نے اپنی کامیابی میں اپنی خاندانی پس منظر کو اپنی کامیابی کا سبب بتایا۔ثانیہ نے کہاکہ جب میں نے چھ سال کی عمر سے گھر سے باہر نکل کر کھیلنا شروع کیا تھا۔ تب چھوٹی اسکرٹ پہن کر کھیلنے پر مجھے چھینٹا کشی کا سامنا کرنا پڑتا تھا۔ لیکن میرے والدین نے ہمیشہ میرا حوصلہ بڑھایا ۔ ان کی حمایت اور مسلسل حوصلہ افزائی کے سبب ہی میں اس مقام تک پہنچ پائی، پھر بھی ہندوستانی خاتون کو ابھی بھی طویل سفر طے کرنا ہے ۔ ٹینس کھلاڑی نے سائنا نہوال، پی وی سندھو، ساکشی ملک، ایم سی میريکوم جیسی قدآور کھلاڑیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ان تمام کے اہل خانہ نے ہمیشہ ان کو آگے بڑھنے کی ہمت دی اور انہوں نے زمانے کی پرواہ نہیں کی۔

جواب چھوڑیں