پاور پلانٹس کو کوئلہ الاٹ کرنے مرکز کی پالیسی غیر درست: کے سی آر

 تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ہفتہ کے روز مرکز سے مطالبہ کیا کہ کوئلہ الاٹ کرنے کے طریقہ کار میں تبدیلی لاتے ہوئے برقی پیداوار کے مصارف میں کمی لائے کوئلہ الاٹ کرنے کا جو طریقہ کار ہے اس میں تبدیلی لاتے ہوئے برقی پیداوار کو بڑھایا جاسکتا ہے جس سے پیداوار کے مصارف میں کمی آئے گی ۔ انہوںنے کہا کہ وہ اس سلسلہ میں بہت جلد (انتخابی نتائج کے اعلان کے بعد ) مرکز سے نمائندگی کریں گے ۔ سی ایم او سے ہفتہ کی شب جاری کردہ اعلامیہ میں یہ بات کہی۔ انہوں نے ریاست میں برقی طلب میں اضافہ کو مدنظر رکھتے ہوئے این ٹی پی سی سے تلنگانہ کو 2ہزار میگا واٹ برقی سربراہ کرنے کی خواہش کی ہے ۔ پاور پلانٹس کو کوئلہ سربراہ کرنے کی مرکز کی جو پایسی ہے ، وہ غیر درست ہے ۔ رام گنڈم این ٹی پی سی پلانٹ کے لئے اڈیشہ کے مندا کنی کانوں سے کوئلہ سربراہ کیا جاتا ہے جو یہاں سے950 کیلو میٹر کی مسافت پر ہے اس کے بجائے رام گنڈم کو سنگارینی (سنگارینی کالریز ریاستی حکومت کا ادارہ ) سے کوئلہ الاٹ کیا جانا چاہئے۔ یہی وجہہ ہے کہ برقی پیدا وار کے مصارف میں اضافہ ہورہا ہے۔

جواب چھوڑیں