مایا وتی کی اکھلیش سے ملاقات

 بی ایس پی سربراہ مایا وتی اور سماج وادی پارٹی کے صدر اکھلیش یادو نے آج یہاں ملاقات کی ۔ گذشتہ روز اگزسٹ پولس میں بتایا گیا تھاکہ سیاسی لحاظ سے اہم ریاست اترپردیش میں ان کے اتحاد کو فائدہ ہوگا ۔ یادو جنہوں نے بی جے پی سے مقابلہ کرنے بی ایس پی اور آر ایل ڈی کے ساتھ مل کر مخلوط اتحاد تشکیل دیا ہے ، مایا وتی کی قیامگاہ پہنچے اور بند کمرہ بات چیت تقریباً ایک گھنٹہ تک جاری رہی ۔ دونوں سرکردہ قائدین کے درمیان ہونے والی بات چیت کی تفصیلات کا فوری طور پر پتہ نہیں چل سکا ہے ۔ تلگو دیشم پارٹی کے صدر چندرا بابو نائیڈو نے ہفتہ کے روز اکھلیش یادو اور مایا وتی دونوں سے لکھنؤ میں علیحدہ علیحدہ ملاقات کی تھی ، تاکہ منقسم فیصلہ کی صورت میں غیربی جے پی جماعتوں کے اتحاد کے امکانات کے بارے میں تبادلۂ خیال کیا جاسکے۔ اتحاد کے معاہدہ کے ایک حصہ کے طور پر بی ایس پی نے 38 نشستوں پر اور سماج وادی پارٹی نے 37 نشستوں پر مقابلہ کیا تھا ۔ انہوں نے آر ایل ڈی اور کانگریس کیلئے 3 نشستیں چھوڑ دی تھیں ۔ انہوں نے رائے بریلی اور امیتھی سے کسی امیدوار کو میدان میں نہ اتارنے کا فیصلہ بھی کیا تھا۔ یہ دونوں حلقے بالترتیب یوپی اے صدرنشین سونیا گاندھی اور صدرِ کانگریس راہول گاندھی کے گڑھ تصور کیے جاتے ہیں ۔

جواب چھوڑیں