انضمام‘ پاکستانی ٹیم کے چیف سلیکٹر کے عہدہ سے مستعفی

پاکستان کرکٹ ٹیم کے آئی سی سی ورلڈکپ میں مایوس کن کارکردگی کے بعد اس کے چیف سلیکٹر انضمام الحق نے آج اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دیاہے۔ ان کی مدت اس ماہ 31 جولائی کو ختم ہورہی تھی۔ سابق کرکٹر انضمام نے فوری طورپر اپنے عہدہ سے استعفی دینے کا اعلان کیاہے۔ اتوار کے روز انگلینڈ میں اختتام پذیر ہوئے آئی سی سی ورلڈکپ میں ٹیم کی کارکردگی اور اس کے انتخاب کے سلسلے میں کافی سوال اٹھائے گئے تھے۔ انضمام الحق نے آج ایک پریس کانفرنس میں بتایاکہ انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کو اس فیصلے کی اطلاع دے دی ہے۔ انضمان الحق نے کہاکہ میں گزشتہ 3 برس سے زیادہ وقت سے چیف سلیکٹر کے عہدے پر فائز تھا اور میں نے اپنے معاہدہ کو آگے نہ بڑھانے کا فیصلہ کیاہے۔ ستمبر میں آئی سی سی ورلڈ ٹسٹ چمپئن شپ، آئی سی سی ٹوئنٹی 20 ورلڈکپ 2020 اور پھر2023 میں آئی سی سی ورلڈکپ ہوناہے۔ میرا خیال ہے کہ یہ صحیح وقت ہے جب پی سی بی کو اپنا نیا چیف سلیکٹر کا انتخاب کرلینا چاہیے جو بورڈ میں نئے خیالات اور نئی توانائی کے ساتھ کام کرے۔ پاکستان کیلئے سب سے زیادہ ٹسٹ کھیلنے والے انضمام الحق نے کہاکہ میں نے پی سی بی چیرمین احسان مانی اور منیجنگ ڈائرکٹر وسیم خان سے بات کرکے پیر کو ہی انہیں اپنے فیصلے سے مطلع کردیا تھا۔ میں سلیکشن کمیٹی کے تعاون کیلئے شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں ۔ 49 سالہ انضمام نے یہ بھی واضح کردیا کہ بورڈ نے اگرچہ انہیں اس عہدے پر برقرار رہنے کیلئے کسی طرح کی پیشکش نہیں کی ہے۔ انہوں نے عالمی کپ میں اپنی ٹیم کی کارکردگی کو بھی اچھا بتایا اور ٹیم کی تعریف کی۔ پاکستانی ٹیم سیمی فائنل کیلئے کوالیفائی کرنے سے چوک گئی تھی۔ انضمام الحق کو اپریل 2016 میں پاکستان بورڈ نے چیف سلیکٹر مقرر کیاتھا۔ ان کے دور میں پاکستان نے چمپئنس ٹرافی حاصل کرنے جیسی بڑی کامیابی حاصل کی تھی۔ اگرچہ ورلڈ کپ ٹیم میں اپنے رشتہ دار کے انتخاب کے سلسلے میں حق پر کافی تنقید کی گئی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *