چیف منسٹر سے ملنے کیلئے کس سے ربط پیدا کرنا ہوگا: راجہ سنگھ

بی جے پی کے واحد رکن اسمبلی راجہ سنگھ نے اسمبلی میں برسر عام اس بات کی شکایت کی کہ انہیں‘ چیف منسٹر سے ملاقات کیلئے مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ کے سی آر کی موجودگی میں ایوان میں راجہ سنگھ نے جب یہ شکایت کی تو اسپیکر نے ان کا مائک بند کردیا۔ ان کی اس شکایت پر کے چندرشیکھر رائو اپنی نشست سے کھڑے ہوگئے اور کہا کہ ارکان اسمبلی‘ کیلئے وہ دستیاب رہیں گے۔ یہ معزز ارکان‘ عوامی شکایتوں پرانہیں نمائندگیاں پیش کرسکتے ہیں تاہم ارکان اسمبلی کو قبل از وقت آفس سے ٹائم لینا ہوگاجس کے فوری بعد راجہ سنگھ اپنی نشست سے کھڑے ہوگئے اور کہنے لگے کہ چیف منسٹر کے سی آر سے ملاقات کیلئے وقت لینے کیلئے آیا کوئی فون نمبر ہے یاپھر کس سے ربط پیدا کیا جاسکتا ہے؟ وہ اپنی بات کہہ رہے تھے کہ اسپیکر نے دوبارہ سنگھ کا مائک بند کردیا۔ یہ واقعہ‘ ایوان میں نیو میونسپل ایکٹ بل پر مباحث کے دوران پیش آیا۔ اس دوران راجہ سنگھ نے ان کے حلقہ میں سڑکوں‘ ڈرین کی خستہ حالت اور عوامی مسائل کا تذکرہ کیا اور شکایت کی کہ جی ایچ ایم سی کمشنر‘ میری تحریری شکایت یا مکتوب کا کوئی جواب نہیں دے رہے ہیں جس پر کے چندرشیکھر رائو نے کہا کہ عہدیداروں کو رکن اسمبلی کے مکتوب کا جواب دینا ہوگا۔ کے سی آر نے راجہ سنگھ سے پوچھا اگر آپ کے پاس کوئی عوامی شکایت ہے تو مجھے پیش کریں۔ میں جواب دوں گا اور فوری ایکشن لیتے ہوئے متعلقہ کام انجام دیا جائے گا۔ چیف منسٹر کے اس جواب پر راجہ سنگھ نے کہا کہ آخر وہ کونسا فون نمبر ہے جس پر ربط پیدا کرتے ہوئے چیف منسٹر سے ملاقات کا وقت طئے کیا جاسکے گا۔ کے سی آر سے ملاقات کا وقت طئے کرنے کیلئے آخر کس سے ربط پیدا کرنا ہوگا۔

جواب چھوڑیں