اسمبلی کے سابق اسپیکر خودکشی کی کوشش کے بعد فوت

آندھراپردیش قانون ساز اسمبلی کے سابق اسپیکر ڈاکٹر کوڈیلا شیوا پرساد‘ آج مبینہ طورپر خودکشی کی کوشش کے بعد فوت ہوگئے۔ بتایا جاتا ہے کہ رائو نے حیدرآباد میں پیر کو اپنے مکان میں خودکشی کی کوشش کی جنہیں فوری ہاسپٹل لے جایا گیا جہاں وہ جانبر ہوسکے۔ وہ‘ 72سال کے تھے۔ پولیس نے فوری ان کے مکان موقوعہ بنجارہ ہلز پہونچی اور تحقیقات کا آغاز کردیا۔ یہ خبر تیزی کے ساتھ پھیل گئی کہ رائو ایک خانگی ہاسپٹل میں فوت ہوگئے۔ رائو کے ڈرائیور وگن مین نے انہیں بسوا تارک راما انڈو۔امریکن ہاسپٹل منتقل کیا مگر ڈاکٹروں نے موت کی وجوہات کا انکشاف نہیں کیا۔ وجئے واڑہ میں تلگودیشم پارٹی کے قائد بودھا وینکٹا نے الزام عائد کیا کہ وائی ایس آر سی پی حکومت کی ذہنی ہراسانی سے رائو نے اپنی زندگی کو ختم کرلیا۔ ضلع گنٹور کے رہنے والے ٹی ڈی پی کے سینئر تلگودیشم پارٹی قائد کوڈیلہ شیواپرساد نے متحدہ ریاست اے پی میں این ٹی آر اور چندرابابونائیڈو کی کابینہ میں شامل تھے۔ وہ 2014سے 2019تک اسمبلی کے اسپیکر رہ چکے ہیں۔ (یواین آئی) کے بموجب تلگودیشم پارٹی کے سینئر قائد وآندھراپردیش قانون ساز اسمبلی کے سابق اسپیکر ڈاکٹر کوڈیلہ شیواپرساد رائو کا حرکت قلب بند ہوجانے سے پیر کو یہاں ایک خانگی ہاسپٹل میں انتقال ہوگیا۔ طبیب سے سیاستداں بنے 72سالہ رائو کو پارٹی ٹکٹ پر 6بار اسمبلی کیلئے منتخب ہونے کا اعزاز حاصل تھا۔ پسماندگان میں اہلیہ ششی کلا‘ دختر ڈاکٹر وجیہ لکشمی‘ دو فرزندان ڈاکٹر شیوارام کرشنا اور ڈاکٹر ستیہ نارائنہ شامل ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *