پرانے شہر میں خطرناک عادی سارق گرفتار

چندرائن گٹہ پولیس نے آج ایک خطرناک سارق کو گرفتار کرلیا اور اس کے قبضہ سے آدھا کیلو طلائی زیورات‘ ایک کیلو چاندی کی اشیائ‘ ایک سونی ایل سی ڈی ٹیلی ویژن اور 2000سعودی ریال جملہ مالیتی 25لاکھ روپئے برآمد کرلئے۔ کمشنر سٹی پولیس انجنی کمار نے آج یہاں میڈیا کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ پٹرولنگ کے دوران ڈیٹیکٹیو سب انسپکٹر کی زیر قیادت ٹیم نے پیر کو پیلی درگاہ ایرہ کنٹہ کراس روڈ کے قریب ایک شخص کو مشتبہ حالت میں گھومتے ہوئے پایا۔ پولیس نے اس کی تلاشی لی تب اس کے قبضہ سے سونے کے زیورات دستیاب ہوئے۔ اس شخص کو پولیس اسٹیشن لے جاکر تفتیش کی گئی جس پر اس نے سرقہ کا اقبال جرم کیا اور ملزم کی شناخت 36سالہ محمد سمیر عرف لالہ کار ڈرائیور ساکن بنڈلہ گوڑہ کی حیثیت سے کی گئی۔ ملزم چندرائن گٹہ پولیس اسٹیشن کے حدود میں گذشتہ 5سال میں قفل شکنی کی 9وراداتوں میں ملوث رہا۔ کمشنر پولیس نے بتایا کہ ملزم گذشتہ دس برسوں سے بنڈلہ گوڑہ میں مقیم ہے اور اس کے والدین یاقوت پورہ میں رہتے ہیں۔ اس سے قبل ملزم کو چارمینار پولیس نے مسروقہ بائک خریدنے کے کیس میں گرفتار کیا تھا۔ جیل سے رہائی کے بعد وہ سعودی عرب چلا گیا اور وہاں کارڈرائیور کی حیثیت سے کام کرنے لگا بعد ازاں وہ وہاں سے شہر واپس آگیا۔ انہوں نے کہا کہ جلد امیر بننے کی خواہش میں ملزم سمیر نے منصوبہ بند طورپر سرقہ کی وارداتیں انجام دینا شروع کردیا۔ ملزم کی خاص بات یہ ہے کہ وہ اسکرو ڈرائیور اور ہتھوڑی کی مدد سے قفل شکی کی وارداتیں انجام دیتا تھا۔ انجنی کمار نے بتایا کہ یہ گرفتاری انسپکٹر ردرا بھاسکر‘ سب انسپکٹر ایم کنڈل رائو اور کرائم اسٹاف نے ایڈیشنل ڈی سی پی ڈاکٹر ایم اے رشید اور جوائنٹ کمشنر سی سی ایس اویناش موہنتی انچارج ڈی سی پی سائوتھ زون کی نگرانی میں کی۔ کمشنر پولیس نے عوام سے خواہش کی ہے کہ وہ شہر میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کریں۔ انہوں نے پرانے اور نئے شہر کی کالانیوں کی ویلفیر ٹیموں‘ تاجرین اور دیگر انجمنوں سے خواہش کی ہے کہ وہ سی سی کیمروں کی تنصیب کے ٹاسک کو پورا کرنے کیلئے آگے بڑھیں۔ انہوں نے کہا کہ شہر میں 3لاکھ سے زائد کیمرے نصب کئے گئے ہیں جبکہ حیدرآباد‘ سائبرآباد اور رچہ کنڈہ کمشنریٹس میں 10لاکھ کیمرے نصب کرنے کا نشانہ رکھا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *