پی ایس ایل میں کروڑوں روپیوں کی بے ضابطگیوں کا انکشاف

پاکستان سوپر لیگ (پی ایس ایل) میں ساڑھے 13 ارب روپے سے زائد کی بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے جس کے بعد آڈیٹر جنرل نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کو معاملات کی تحقیقات کی سفارش کردی ہے۔ رپورٹ کے مطابق آڈیٹر جنرل نے پاکستان سوپر لیگ کے پہلے دو آڈیشنز کا آڈٹ مکمل کرلیا ہے۔ پی ایس ایل کی آڈٹ رپورٹ بھی منظر عام پر آگئی ہے، پاکستان سوپر لیگ کی آڈٹ رپورٹ کے مطابق فرنچائزز کی نیلامی غیر منصفانہ طریقے سے کی گئی۔ فرنچائزز کو طئے شدہ حصے سے زائد ادائیگیاں کی گئیں اور دوسری طرف فرنچائزز سے مکمل وصولیاں بھی نہ کی جاسکیں۔ آڈیٹر جنرل نے پی ایس ایل میں خدمات انجام دینے والے صحافیوں کو دی جانے والی رقم بھی غیرقانونی قرار دیدی ہے۔ رپورٹ کے مطابق پی ایس ایل کی تشہیر ی مہم، نشریاتی حقوق، میڈیا رائٹس اور کیش اے کروڑ میں لاکھوں ڈالرز کی بے ضابطگیاں ہوئیں۔ آڈٹ رپورٹ کے مطابق پی ایس ایل ون میں 97 کروڑ 42 لاکھ آمدنی اور 90 کروڑ 80 لاکھ روپے کے اخراجات ہوئے۔ پی ایس ایل ٹو میں 1 ارب 46 کروڑ روپے آمدنی اور1 ارب 6 کروڑ روپے کی اخراجات ہوئے۔ اس طرح مجموعی طورپر پی ایس ایل کے پہلے دو آڈیشنز میں 47 کروڑ کمائی ہوئی۔ رپورٹ میں انکشاف کیاگیاکہ فرنچائزز کو شیئر سے 24 کروڑ 86 لاکھ روپے زائد ادائیگیاں کی گئیں۔ فرنچائزز کو 5 کروڑ 44 لاکھ زرتلافی دیئے گئے۔ آڈٹ رپورٹ کے مطابق لاہور میں پی ایس ایل فائنل کے اخراجات کا غلط تخمینہ لگایا گیا۔ لاہور میں کھیلے گئے فائنل میں ایک کروڑ 88 لاکھ زائد اخراجات آئے۔ رپورٹ میں بتایا گیاکہ پی ایس ایل میں خدمات انجام دینے والے صحافیوں کو غیرقانونی طورپر سوا کروڑ روپے ادا کئے گئے۔ اسی طرح نشریاتی حقوق کے حوالے سے بھی سو کروڑ ڈالرز سے زائد کے بی ضابطگیاں سامنے آئی ہیں۔ آڈیٹر جنرل نے پاکستان کرکٹ بورڈ کو معاملات کی تحقیقات کی سفارش کردی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *