ہریانہ میں بھی این آر سی کو روبہ عمل لانے کھٹر کا اشارہ

 چیف منسٹر ہریانہ منوہر لال کھٹر نے آج شہریوں کے قومی رجسٹر (این آر سی) کو ہریانہ میں متعارف کرانے کا اشارہ دیا ہے ، تاہم کوئی قطعی منصوبوں کی وضاحت نہیں کی ۔ انہوں نے آج یہاں کئی ممتاز شخصیتوں بشمول ریاست کے سابق صدرنشین انسانی حقوق کمیشن ، ریٹائرڈ جسٹس ایچ ایس بھلا اور سابق صدرِ بحریہ اڈمیرل سنیل لامبا سے ملاقات کی ۔ ریاستی انتخابات سے قبل بی جے پی کے ملک گیر جن سمپارک پروگرام کے حصہ طور پر یہ ملاقات ہوئی ۔ انڈین اکسپریس نے یہ اطلاع دی ۔ مسٹر کھٹر نے پنچ کولا میں مسٹر بھلا کی قیامگاہ کے باہر میڈیا سے خطاب کیا اور کہا کہ ’’جسٹس بھلا ، ہریانہ انسانی حقوق کمیشن کے صدر تھے ۔ علاوہ ازیں وہ دیگر مختلف عہدوں پر فائز تھے ۔ اِن دنوں وہ این آر سی پر کام کررہے ہیں۔ میں نے یہ بھی بتایا کہ ہم ، ہریانہ میں این آر سی پر عمل کریںگے ۔ میں نے اُن سے (بھلا سے) این آر سی پر عمل کے بارے میں تعاون طلب کیا ۔ جسٹس بھلا نے یہ مشورہ بھی دیا کہ ہریانہ کا بھی ایک لا کمیشن ہونا چاہیے ۔ ہم اس کا بھی جائزہ لیںگے اور اگر اس سے عوام کو فائدہ ہوتا ہے تو اِس ریاست میں یہ کمیشن قائم کریںگے ۔‘‘

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *