لاک ڈاؤن کے سبب ملک بھر میں نماز جمعہ معطل

 کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام کے لئے حکومت کی جانب سے مکمل لاک ڈاؤن کے فیصلہ کی تعمیل کرتے ہوئے مسلمانوں کے مختلف فرقوں نے نماز جمعہ معطل کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ بہرحال مساجد سے اذاں کا سلسلہ جاری رہے گا۔ جماعت ِ اسلامی شرعی کونسل نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ صرف امام ‘ موذن‘ خادم اور مسجد کے خدمت گاروں کو ہی نماز جمعہ میں شریک ہونا چاہئے۔نماز اور خطبہ کم سے کم وقت میں مکمل کرلیا جانا چاہئے جبکہ عوام کو گھر پر ہی نماز ِ ظہر ادا کرنی چاہئے۔ شیعہ فرقہ نے بھی ملک بھر میں نماز جمعہ معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور عوام سے کہا ہے کہ وہ حکومت کی ہدایات کے مطابق گھروں میں محدود رہیں۔ ممبئی کے مولانا اشرف امام نے کہا کہ ہم نے گزشتہ ہفتہ سے ہی مساجد میں نماز جمعہ اور نماز جماعت پنچگانہ کو معطل کردیا ہے۔ حکومت کی خواہش تک یہ سلسلہ جاری رہے گا۔ ہر شخص کا یہ بنیادی فرض ہے کہ وہ جانوں کا تحفظ کرے اور حکومت کی ہدایت پر عمل کرے۔ ہم مساجد کے لاؤڈ اسپیکرس اور سوشل میڈیا کے ذریعہ عوام سے اپیل کررہے ہیں کہ وہ گھروں تک محدود رہیں۔ کشمیر کے مفتی اعظم نصیرالاسلام نے بھی عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ گھروں میں ہی نماز ادا کریں۔ انہوں نے بتایا کہ نماز جمعہ اور باجماعت نماز کو معطل کردیا گیا ہے۔ اسلام میں اس کی اجازت ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *