کورونا سے مقابلہ کیلئے ایم پی فنڈس کا اختصاص

کانگریس قائدین راہول گاندھی‘ اے کے انٹونی اور ششی تھرور نے جو تمام کیرالا کے ارکان پارلیمنٹ ہیں‘ اپنے حلقوں میں کورونا وائرس سے مقابلہ کے لئے اپنے ایم پی لیڈ فنڈس مختص کردیئے ہیں۔ راہول گاندھی نے اپنے وائناڈ لوک سبھا حلقہ کے لئے ارکان پارلیمنٹ کے لوکل ایریا ڈیولپمنٹ فنڈ سے 2.66 کروڑ روپے منظور کئے ہیں جبکہ ششی تھرور نے ترواننتاپورم کے لئے مماثل رقم منظور کی ہے اور رکن راجیہ سبھا اے کے انٹونی نے اپنے آبائی ضلع الاپوزہ کے لئے بھی اتنی ہی رقم کو منظوری دی ہے۔ ایم پی لیڈ کے تحت ارکان پارلیمنٹ ‘ ضلع کلکٹر سے یہ سفارش کرسکتے ہیں کہ وہ ان کے متعلقہ حلقوں میں کس پراجکٹ پر یہ رقم خرچ کریں۔ بتایا گیا ہے کہ کیرالا کے دیگر ارکان پارلیمنٹ بھی اس اسکیم کے تحت کیرالا میں کورونا وائرس سے مقابلہ کے لئے بہت جلد رقم جاری کریں گے۔ ریاست میں زائداز 76 ہزار مشتبہ مریضوں کو ان کے مکانات یا ہاسپٹلس میں الگ تھلگ رکھا گیا ہے۔ کیرالا میں 118 افراد میں کورونا کا ٹسٹ مثبت آیا ہے۔ قبل ازیں دن میں ششی تھرور نے ٹویٹر کے ذریعہ وزیراعظم نریندر مودی سے اپیل کی کہ وہ پارلیمنٹ کی نئی عمارت کے لئے مختص 20 ہزار کروڑ روپے اور سنٹرل وِسٹا کے لئے مختص 15ہزار کروڑ روپے کووِڈ19 سے مقابلہ کرنے مختص کریں۔ ششی تھرور نے ٹویٹر پر کہا کہ یہ رقم محض 20 ہزار کروڑ روپے فی ضلع ہوگی۔ بحران کے موقع پر عمارتوں پر اتنی بڑی رقم خرچ کرنا ‘ ملتوی کئے جانے کے قابل آسائش ہے۔ انہوں نے فیس بک کے ذریعہ بھی یہ مسئلہ اٹھایا۔ انہو ںنے اپنے ساتھی قانون سازوں کو فُل باڈی پروٹیکشن اِکوپمنٹ کِٹ (پی پی ای)‘ این 95 ماسکس‘ فیس شیلڈس ‘ میڈیکل گاگلس ‘ تھرما میٹرس اور دیگر آلات کی قلت سے واقف کرایا۔ انہوں نے کہا کہ ان چیزوں کی خریدی کے لئے ہم اپنے ترقیاتی فنڈس کا رخ موڑسکتے ہیں۔ مجھے یقین ہے کہ کیرالا کے ہمارے کئی قانون ساز ایسا کریں گے۔ اگر اس میں شدت پیدا کی جائے تو بہت فائدہ مند ثابت ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *